This Very Beautifully Stories In Urdu And The Name Of This Urdu Stories Is Wife After Wedding. So Read The Full Urdu Stories And Enjoy.
Moral Stories Real Life Stories Short Stories Urdu Stories

New Stories In Urdu : Wife After Wedding

This Very Beautifully Stories In Urdu And The Name Of This Urdu Stories Is Wife After Wedding. So Read The Full Urdu Stories And Enjoy.

New Stories In Urdu : Wife After Wedding

After Wedding

Part 1 : Urdu Stories

شادی کے بعد یہ اسکی پہلی عید تھی اور آج وہ ایک سسرالی تقریب سے لوٹی تھی مگر ساس کے چہرے پہ

چھائے تیوروں نے اسکی ساری خوشی کو پھیکا کر دیا تھا۔۔۔ نہ جانے کیوں ناراض ہیں اب یہ یہاں تو کوئی کام

بھی نہیں تھا جو اس نے نہیں کیا اور جس کی وجہ سے وہ ناراض ہوں پھر آخر ایسا کیا تھا جس نے اس کی

ساس کا موڈ خراب کیا ہوا تھا اور جسے دیکھ کر اس کے میاں بھی اس کو بلانا گوارہ نہیں کر رہے تھے۔۔ تمام

راستہ پریشانی میں گزرا اللہ اللہ کر کے گھر آیا اس نے بھاگ کے اپنے کمرے میں پناہ لی مگر بدقسمتی کہاں

پیچھا چھوڑتی ہے میاں نے اندر جاتے ہی غصے سے سوال کیا ۔۔ کیا کیا اب تم نے کبھی میری ماں کو خوش

نہیں کر سکتی کتنی بار سمجھایا ہے اپنی پسند سے لایا ہوں تمہیں اب تمہیں ان کا دل جیتنا ہے۔۔۔ مگر ۔۔ مگر

میں نے تو کچھ نہیں کیا ۔۔ وہ رونے کو تھی کہ اتنے میں دروازہ کسی نے زور سے پیٹا اور باہر سے ہی

چھوٹی نند کی غصیلی آواز آئی۔۔بھائی آپکو اور بھابھی کو امی بلا رہی ہیں۔۔۔وہ سمجھ گئی بس شامت کا وقت آن

Part 2 : Stories In Urdu

پہنچا ہے۔۔ڈرتی سہمی میاں کی طرف رحم کی التجائی نظروں سے دیکھا مگر وہ کہاں اس کا ساتھ دینے والا

تھا الٹا مزید تیور بگاڑ کے اس کو لے گیا ۔۔۔ساس کے کمرے میں داخل ہوتے ہیں جیسے سب اسی کے منتظر

تھے چھوٹی بڑی سب نندیں اردگرد تماشا دیکھنے کو تیار تھیں بیڈ کی ایک جانب سسر تیور چڑھائے بیٹھے

تھے اور پھر ساس نے سوال شروع کیا۔۔۔ تم نے وہاں سب کو بتایا کہ یہ سوٹ جو تم پہن کہ گئی تھی وہ تمہارے

میکے سے آیا تھا؟؟وہ پریشان گھبرائی بولی۔۔ج۔۔ج۔۔جی وہ سب نے پوچھا تو میں نے بتا دیا کیوں؟؟؟؟ غصے

بھی آواز نے اس کا وجود ہلا دیا۔۔۔وہ بت بن گئی کہ اس میں آخر کیا گناہ ہو گیا اس سےاتنے میں ساس کا زلت

بھرا لیکچر شرور ہوا۔۔ اسکو شرم نہیں آتی اپنے میاں کا تماشا بناتے ہوئے سب کو بتایا کہ سوٹ ماں نے دیا ہے

جیسے ہم تو کچھ دیتے ہی نہیں اسکو بےشرم یہاں کا کھا کہ یہیں کو زلت دیتی ہےنہیں امی۔۔ میں نے ایسا کچھ

نہیں کہا وہ تو سب نے کہا کہ بہت پیارا ہے کہاں سے لیا تو۔۔۔تو تم نے جھٹ سے ماں کی عزت کروا دی اور

Part 3 : Short Urdu Stories

جو دس دس ہزار کے سوٹ تمہیں میرابیٹا لا کے دیتا ہے اس کا کبھی زکر کیا؟؟؟اور وہ ایک لمحے کو سوچ

میں پڑ گئی کہ اب تک ایک بھی سوٹ ایسانہی  تھا جو اس کے میاں نے اسکو لا کے دیا ہو دس ہزار کا توبہت

دور کی بات ہے۔۔ مگر کہہ نہ سکی۔۔دیکھ لو بیٹا یہ لائے ہو تم اسکی خاطر منتیں کرتے تھے لانے کی جو

تمہاری عزت نہیں بناسکتی اتنی محفل میں تماشا بنا آئی تمہارا سب نے اتنا زلیل کیا کہ بہو کو ایک جوڑا بھی

نہین دلا سکے ہم جیسے سب کچھ اسکی ماں پورا کرتی ہے نا اور جو سار دن منہ چلتا ہے وہ بھی ماں کو کہہ

دے کہ دے دیا کرے اسے سسر نے بھی ہمایت میں کہا ۔۔ یہ نہیں ہمیں عزت دے سکتی تم دیکھنا اور کتنا زلیل

کروائے گی تمہیں  گلی گلی رولے گی ہماری عزت۔۔لوگ کہتے بہت پیاری پڑھی لکھی سلجھی ہوئی۔۔ ہنہہ یہ

کیسی پیاری ہے جو میاں کو عزت نہ دے سکے ساس نے بھی مزید غصہ نکالا ۔۔۔ ماں باپ نے اتنا بھی نہیں

سمجھایا کہ تمیز کیا ہوتی ہے ڈوئی ہلانی آتی نہیں سنگہار کرا لو لوگوں سے گپیں لگوا لو بڑی آئی پڑی لکھی

Part 4 : Best Stories In Urdu

جاہل۔۔۔اور بھی نہ جانے کیا کچھ وہ بولتی رہیں ساس اور وہ بس بت بنی آنسوئوں سے بھیگی آنکھیں لئیے سر

جھکائے کھڑی رہی اس امید پہ کہ شاید اب اسکا میاں جو اس سے محبت کے بے شمار دعوے کرتا تھا شاید

اس کی ہمایت میں کچھ بولےمگر بھرم وہاں ٹوٹا جب میاں نے یہ کہا کہ ماں جی چھوڑیں یہ کبھی میری سگی

نہیں ہو سکتی میں سمجھ گیا ہوں اسکو آپ اپنا خون کیوں جلاتی ہیں۔۔۔ اس پر ساس کا جذبہ اور بڑھ گیا اور

بولی نہیں بیٹا میں تو برداشت کر ہی رہی ہوں مگر تمہاری عزت پہ حرف ائے میں کیسے برداشت کروں تم

اسے اتنے اتنے پیسے دو اسکا تو کبھی کوئی زکر نہیں کیا اس نے ابھی کل اتنے پیسے دے رہے تھے اسکو

تم۔۔۔اسنے اپنی بہنوں کو عید دی ہوگی نا اب نہیں بول رہی کیا عید دی ہے اپنی بہنوں کو؟؟ ۔۔اور اس نے گھبرا

کہ فورا جھوٹ بولا کہ نہیں میں نے تو کچھ بھی نہیں دیا۔۔ماں کی طرف سے ملے پیسوں سے اسنے جو عید دی

تھی بہنوں کو اس سب کےبعد اسکوچھپاناہی اس کومناسب لگا۔۔جس پہ تلملا کہ ساس نے کہا ۔۔ ہمیں کیا پتہ کتنا

Part 5 : 9 Line urdu Stories

کتنا دیتی ہے انہیں تم نے تو کبھی دے کہ حساب بھی نہیں کیا بیٹا ۔۔۔جس پہ میاں نے معصوم سی شکل بنا لی

جبکہ حقیقت میں اس نے کبھی بنا حساب اور بہت ضروری چیز کے کوئی پیسہ کبھی نہ دیا تھا۔۔۔۔جب جی بھر

کہ بول چکے سب تو ساس نے کہا جائو ہمیں کیا لے جائو اسے تمہاری عزت نہیں کرسکتی تو ہماری کیا کرے

گی۔۔اس نے نظر اٹھائی نندیں سسر سب تمائی بنے اسے دیکھ رہے تھے سب کی نظروں میں نفرت تھی اس

کے لئیے وہ تماشا بن گئی تھی سب کا۔۔ اوریہ تو تب سے ہی ہوگیا تھا جب چھ ماں پہلے اس کی شادی ہوئیروز

کسی نہ کسی بات پہ ایسے ہی سب کے سامنے اس کوزلیل کیا جاتا تب بھئ جب اس نے شروع سے ہی کام

کرنا شروع کر دیا اور ماں باپ کی لاڈلی نے خوشی سے یہ بات محفل میں بتا دی کہ اب تو مجھے سب کرنا

آگیا ہے روز کی ککنگ بھی میں ہی کرتی ہوں ۔۔بسسس ۔۔اور تب بھی جب ہاتھوں پہ بنے چھالے دیکھ کر ماں

تڑپ اٹھی اور اس نے بےساختہ آنسو چھپا کہ ماں خو بتا دیا کہ ملازم سے اس کے روم کی صفائی نہیں

You Can See More Urdu Stories 🙄 

Leave a Reply